پاکستان ایک اور بڑا لاک ڈاؤن نہیں سہہ سکے گا‘

وزیرِ اعظم پاکستان کی معاونِ خصوصی برائے ڈیجیٹل پاکستان تانیہ آئدروس کا کہنا ہے کہ ان کی رائے میں پاکستان شاید ایک اور بڑا لاک ڈاؤن برداشت نہ کر سکے، ’اسی لیے ہمیں سمارٹ لاک ڈاؤن کا استعمال کرنا پڑے گا۔‘

کورونا وائرس سے لڑنے میں ڈیجیٹل پاکستان کے کردار کے حوالے سے بی بی سی اردو کو دیے گیے ایک خصوصی انٹرویو میں انھوں نے کہا کہ یہ واضح تھا کہ جس طرح کی یہ صورتحال ہے اس میں اگر آپ کے پاس مصدقہ اور ’ریئل ٹائم‘ ڈیٹا موجود نہیں ہے، تو اس وبا کو محدود کرنے کے لیے آپ کا ردعمل مؤثر ہو ہی نہیں سکتا۔

’تو یہ بات واضح تھی کہ ہمیں حکمتِ عملی کی بنیاد ڈیٹا پر رکھنی ہے۔ پہلی چیز جو ہم نے شروع کی وہ یہ تھی کہ ہم کس طرح مختلف صوبوں کا ڈیٹا اکٹھا کریں۔‘

تانیہ آئدروس کا کہنا تھا کہ شروع میں ہر کوئی اپنے طور سے کام کر رہا تھا تو اس حوالے سے پہلی مشکل یہ درپیش تھی کہ کیسے مختلف نظاموں کے ڈیٹا کو ایک جگہ یکجا کیا جائے۔

’ہم اب (صوبوں کو) یہ نہیں کہہ رہے کہ آپ اپنے لوگوں کو ہمارے سسٹم پر تربیت دیں۔ اب ہم نے ایسا نظام بنا لیا ہے کہ صوبے چاہے اپنے نظام سے معلومات اکھٹی کریں، وہ آ ایک جگہ پر رہی ہیں۔ اس کے علاوہ ہم اس میں نئی خصوصیات بھی ڈال رہے ہیں جیسے کہ جلد آپ کو یہ سہولت بھی میسر ہوگی کہ آپ واٹس ایپ پر کسی ڈاکٹر سے بات کر سکیں۔‘

جواب دیجئے