’نجی شعبہ کارکن کو دفتر آنے پر مجبور نہیں کرسکتا‘

وزارت ہیومن ریسورسز وسماجی فروغ نے کہا ہے کہ نجی شعبہ کورونا وائرس سے بچنے کے لیے تمام احتیاطی تدابیر اختیار کیے بغیر ملازمین کو دفتر آنے پر مجبور نہیں کر سکتا۔
الاقتصادیہ اخبار کے مطابق وزارت نے کہا ہے کہ ’نجی شعبے کو سرکاری ادارے کی ہدایت پر عمل کرتے ہوئے وائرس کے انسداد کے لیے تمام تدابیر اختیار کرنا ہوں گی‘۔
وزارت نے کہا ہے کہ ’وائرس سے بچنے کی احتیاطی تدابیر اختیار کیے بغیر اور کام کرنے والوں کی سلامتی کو یقینی بنائے بغیر کارکنوں کو دفتر آنے پر مجبور کرنا خلاف ورزی ہوگا‘۔
وزارت نے کہا ہے کہ ’ہنگامی حالات میں اگر کارکن کو 14 دن کے لیے گھر میں بیٹھنے کی ہدایت کی جائے تو اس عرصے کی تنخواہ ادا کرنی ہوگی نیز یہ عرصہ سالانہ چھٹی سے منہا نہیں ہوگا‘۔

POST A COMMENT.