سعودی شیئرز مارکیٹ میں ریکارڈ کمی

سعودی شیئرز مارکیٹ میں رواں ہفتے کے آغاز پر نومبر 2008 کے بعد ریکارڈ کمی دیکھی گئی ہے۔ سعودی شیئرز کی قدر میں 8.3 فیصد کمی واقع ہوئی ہے۔

الاقتصادیہ کے مطابق 100 کمپنیوں کے شیئرزکی قدر دس فیصد تک کم ہوگئی ہے جبکہ دیگر شیئرز میں کمی کا تناسب 7اور 5 فیصد ریکارڈ کیا گیا۔

شیئرز کا لین دین 7.15ارب ریال کا رہا۔ یہ ستمبر 2019 کے بعد سے کیش میں شیئرز کے لین دین کی سب سے بڑی شرح ہے۔

خلیجی شیئرز مارکیٹ میں بھی گراوٹ دیکھی گئی۔ کویت اسٹاک ایکسچینج میں دس فیصد ، دبئی میں 7.9 فیصد اور ابوظبی مارکیٹ میں 5.4 فیصد کی کمی ریکارڈ ہوئی۔

خلیجی شیئرز مارکیٹ میں یہ کمی گذشتہ ہفتے کے آخر میں تیل کے نرخوں میں رونما ہونے والی زبردست کمی کے تناظر میں ہوئی ہے۔

Islamic Girls and Boys Name Meaning In Urdu | Hindi

تیل کے نرخ گزشتہ ہفتے دس فیصد کم ہوئے۔ جولائی 2017 کے بعد سے یہ تیل کے نرخوں میں ریکارڈ کمی تھی۔

گذشتہ ہفتے تیل کے نرخوں میں کمی خام تیل کی عالمی طلب کے حوالے سے زبردست خدشات کے ماحول میں ہوئی ہے۔ یہ کمی کورونا وائرس کے پھیلا وکے تناظر میں ہورہی ہے۔ 

سعودی شیئرز مارکیٹ نومبر 2017 کے بعد سے پہلی بار 7 ہزار پوائنٹ کی نچلی سطح پر رہا۔ جنرل گراف 6846 پر بند ہوا۔ جبکہ 621 پوائنٹس کی گراوٹ ہوئی تھی۔

Website Comments

POST A COMMENT.