’خلیج میں پاکستانیوں کے مسائل حل کریں گے‘

’خلیج میں پاکستانیوں کے مسائل حل کریں گے‘

وزیر اعظم کے حال ہی میں نامزد ہونے والے نمائندہ خصوصی برائے مذہبی ہم آہنگی  مولانا طاہر محمود اشرفی نے کہا ہے کہ ان کا ہدف اپوزیشن رہنما مولانا فضل الرحمان نہیں بلکہ ان کی تقرری کا مقصد فرقہ واریت کا خاتمہ اور خلیجی ممالک میں رہنے والے پاکستانیوں کے مسائل کا حل ہے۔
اسلام آباد میں گفتگو کرتے ہوئے پاکستان علما کونسل کے سربراہ مولانا طاہر محمود اشرفی نے کہا کہ وہ چھ ماہ کا ایک منصوبہ لے کر آئے ہیں جس کے تحت عرب اور خلیجی ممالک  میں کام کرنے والے پاکستانیوں کے مسائل حل کیے جائیں گے جبکہ ملک بھر میں ہر سطح پر بین المذاہب ہم آہنگی کونسلز بھی قائم کی جائیں گی۔

اپنے خلیجی ممالک میں تعلقات کے حوالے سے ان کا کہنا تھا کہ ’میں واحد پاکستانی ہوں جسے او آئی سی کا امن ایوارڈ ملا ہے۔ میرا پہلا جو ٹارگٹ یہ ہے کہ ہمارے جو پاکستانی خلیجی ممالک میں ہیں اسلامی ممالک میں ہیں ان کی جو مشکلات ہیں وہ کیسے کم کرنی ہیں اور ان کا اور وہاں کی حکومت یا لیبر ڈیپارٹمنٹ ان کے درمیان فاصلے کیسے کم کیے جائیں۔جو وہاں ہمارے بڑے بڑے تاجر ہیں کاروباری لوگ ہیں پاکستانی جو یہاں کروڑوں ڈالر بھیج رہے ہیں ان کی مشکلات کو کیسے حل کرنا ہے۔‘