آئی فون شائقین کا انتظار ختم، مگر اس میں نیا کیا ہے؟

جدت اور مستحکم پلیٹ فارم کے طور پر سمارٹ فونز کی دنیا میں راج کرنے والی امریکی کمپنی ایپل نے آئی فون 12 کے متعارف کرانے کی تاریخ دے کر انتظار کی کیفیت ختم کر دی ہے۔

آئی فون شائقین کا انتظار ختم، مگر اس میں نیا کیا ہے؟
آئی فون شائقین کا انتظار ختم، مگر اس میں نیا کیا ہے؟
آئی فون شائقین کا انتظار ختم، مگر اس میں نیا کیا ہے؟

ڈیجیٹل میڈیا، بالخصوص کیمونیکیشن ٹیکنالوجی سے متعلق افراد و ادارے اس سلسلے میں بھی خاموش نہیں بیٹھے بلکہ ایپل کے اعلانات یا دیگر ذرائع سے سامنے آنے والی اطلاعات کو بنیاد بنا کر ڈیوائس کی سپیسیفیکیشنز کا جواب بھی تلاش کر ڈالا۔

یہاں یہ بات بھی دلچسپی سے خالی نہ ہوگی کہ ایپل کی جانب سے ستمبر میں ایپ واچ اور آئی پیڈ کے اعلانات کی طرح حالیہ ایونٹ بھی مکمل طور پر آن لائن ہو گا۔ یہ توقع بھی ہے کہ 13 اکتوبر کو صرف آئی فون ہی نہیں بلکہ ہیڈ فونز سمیت مزید کچھ مصنوعات بھی سامنے لائی جائیں گی۔

ایپل کے نئے فلیگ شپ فون میں سپر فاسٹ فائیو جی وائرلیس کنیکٹیویٹی کے ساتھ ساتھ یہ توقع بھی کی جا رہی ہے کہ اس کا ڈیزائن آئی پیڈز کے آئیڈیا پر مبنی ہو گا، گویا نسبتاً بڑے سائز کے سمارٹ فونز سامنے آنے کو ہیں۔
نئے آئی فون کی قیمت آئی فون 11، آئی فون 11 پرو اور آئی فون 11 پرو میکس سے زیادہ ہو گی یا اتنی ہی رہے گی؟ یہ سوال بھی اب تک جواب طلب ہے۔ البتہ ٹیکنالوجی مبصرین کو توقع ہے کہ نئے سمارٹ فون کی قیمت 800 سے 1200 ڈالر کے درمیان رہے گی۔
نئے فون میں کچھ فیچرز مثلاً کیمرے، چِپ اور نئے آپریٹنگ سسٹم آئی او ایس 14 کے اپ گریڈڈ ورژنز بھی متوقع ہیں۔ سوشل میڈیا صارفین ماضی یا مارکیٹ ٹرینڈز کی بنیاد پر اندازے قائم کرنے کے ساتھ ساتھ ایپل ایونٹ کے دعوت نامے اور آفیشل اعلان
کو بنیاد بنا کر بھی اپنی خواہشات و توقعات کا اظہار کر رہے ہیں۔

ایپل صارفین کے خاصے بڑے حلقے کو توقع تھی کہ آئی فونز کو ان لاک کرنے کے لیے شاید اس مرتبہ ٹچ آئی کا آپشن بھی شامل کر دیا جائے۔ ایسا ہوتا تو آئی فونز بھی ماسک اتارے بغیر، فنگر پرنٹس سے ان لاک کیے جا سکتے تھے، تاہم زیادہ امکان ہے کہ نیا آئی فون ٹچ آئی ڈی کے بغیر ہی سامنے لایا جائے گا۔
ایپل آئی فونز کے حریف قرار دیے جانے والے سام سنگ کے فولڈ ایبل ڈسپلے رکھنے والے گلیکسی زی فلپ اور مائیکروسافٹ کی فولڈ کی جا سکنے والی سکرینز کے حامل سرفس ڈیو کی موجودگی میں بھی ٹیکنالوجی مبصرین کو توقع ہے کہ ایپل ایسے کسی ایڈونچر سے باز رہے گا۔ الیکٹرانکس مصنوعات کے ری سیلر ڈی کلیٹر کے سروے کے شرکا کی رائے بھی کچھ ایسی ہی صورت حال کی نشاندہی کرتی ہے، جہاں 53 فیصد افراد کا کہنا تھا کہ وہ رواں برس نیا آئی فون خریدنے میں دلچسپی رکھتے ہیں۔